Barqi Azmi ki kitab Roohe Sukhan par taassuraat

اہل نظر کے تاثرات ٭

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی بر صغیر کے ایک ممتاز شاعر ہیں۔ اعظم گڑھ میں متولّد ڈاroohe sukhanroohe sukhanکٹر برقیؔ اعظمی نے دلی کو وطنِ ثانی بنا لیا ہے اور وہاں آل انڈیا ریڈیو کی فارسی نشریات کے سربراہ ہیں۔ ڈاکٹر برقیؔ اعظمی بے حد زود گو شاعر ہیں لیکن علمی استعداد، علم عروض اور زبان و بیان پر زبردست گرفت کے سبب ان کی برق رفتار شاعری میں تمام تر شعری محاسن بدرجۂ اتم پائے جاتے ہیں۔ وہ اب تک ۳۰۰؍سے زائد شعرا ء و ادباء پر منظوم تاثرات قلمبند کر چکے ہیں۔ اگر گینیز بک آف رکارڈز میں ایسی کوئی کیٹے گری ہوتی تو یقیناً ڈاکٹر برقیؔ اعظمی ہی اس کے حقدار ہوتے۔ ایک اندازے کے مطابق ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی اوسطاً ۱۰ ؍ یا زیادہ طبعزاد، موضوعاتی اور طرحی غزلیں اور منظوم تراجم قلمبند کرتے ہیں۔ غزلیں بھی ۱۱؍ سے زائد اشعار پر مشتمل ہوتی ہیں۔ اکثر طرحی مشاعروں تک میں دو غزلہ کہتے ہیں۔

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی کا کلام نہایت بصیرت افروز ہے۔برقیؔ اعظمی صاحب ایک مخلص اور نایاب شاعر ہیں۔ اُردو ادب کی تاریخ میں ایسے کم ہی شعرا ہوں گے جو زود گوئی کے با وصف اتنا مرصع کلام کہتے ہوں گے۔

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی کے والد جناب رحمت الٰہی برقؔ اعظمی بھی پر گو،کہنہ مشق اور صاحبِ دیوان شاعر تھے۔

ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی بہترین انسان بھی ہیں۔ وہ اپنے معاصرین کے حق میں بھی منظومات قلم بند کرتے ہیں اور کھلے دل سے کرتے ہیں۔ میری ان سے پہلی ملاقات ۳۰؍ دسمبر ۲۰۱۲ ء کو ہوئی جب وہ اُردو یوتھ فورم کے زیرِ اہتمام جشنِ مسلمؔ سلیم کی صدارت کرنے بھوپال تشریف لائے لیکن اس سے پہلے محض انٹر نیٹ پر میرا کلام اور میری ۱۴ بلاگس سے متعارف ہو کر آپ نے مجھ پر ۶ سے زائد منظومات قلمبند کر دی تھیں۔ یہاں تک کہ آپ نے جشنِ مسلمؔ سلیم کا صدارتی خطبہ بھی منظوم دیا جس نے جشن میں شریک بھوپال کے شعراء و ادبا ء کو ان کا گرویدہ بنا دیا۔ اسی دن ان کے اعزاز میں ’’ایک شام برقیؔ اعظمی کے نام‘‘ کا بھی انعقاد ہوا تھا۔ یہاں ان کی شاعری کی مزید تہیں کھلیں۔ اُردو یوتھ فورم کے اراکین میں ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی کی مقبولیت کا یہ عالم تھا کہ وہ دیر رات تک ان کا کلام سنتے اور دادِ تحسین دیتے رہے۔ بڑی تعداد میں یہ نوجوان ڈاکٹر احمد علی برقیؔ اعظمی کو بھوپال ریلوے اسٹیشن پر الوداع کہنے پہنچے اور تب تک ان کا کلام فرمائشیں کر کے سنتے رہے جب تک ٹرین روانہ نہیں ہو گئی۔

میرا ایک فی البدیہہ منظوم تبصرہ ڈاکٹر برقیؔ اعظمی کی قادرالکلامی کی نذر…

ہر قدم بکھریں گے برقیؔ تیرے قدموں کے نشاں

ایک دن مانے گا تیری عظمتیں سارا جہاں

میری دعا ہے کہ ڈاکٹراحمد علی برقیؔ اعظمی کا یہ مجموعہ منظرِ عام پر آ کر ایسی ہی بے پناہ پذیرائی اور مقبولیت سے ہمکنار ہو۔

مسلمؔ سلیم (بھوپال)

***

٭

احمد علی برقیؔ کی شخصیت محتاجِ تعارف نہیں۔آپ کا اندازِ بیان ندرت آمیز ہی نہیں بلکہ کمالِ جدت آفرینی سے لبریز آپ کا کلام اُردو شعری سرمائے کو جلا بخشنے کے لئے کافی ہے۔ آپ کے شعری افکار،رفعتِ تخیل اور باریک بینی کو آپ کے کلام کا ماحصل اور نچوڑ کہا جا سکتا ہے۔آپ کا کلام ’’ سب کو دکھائے چہرۂ انور لئے ہوئی‘‘ کے مصداق ہے اور آپ کا شعری سرمایہ گلہائے فکر و فن کا دفتر لئے ہوئے کے مثل ہے۔

زیبا محمود

***

٭

ایک ایسے عہد میں جب ہر کوئی ادبی چوراہے پر اپنی ڈفلی بجا رہا ہے۔ آنکھوں پر رنگین چشمہ لگا ہے۔’’ ادبی منڈی‘‘ میں گھوم رہا ہے۔ سب کچھ رنگین نظر آرہا ہے۔ ایسے ماحول میں احمد علی برقیؔ اپنی بات کم کرتے ہیں،دوسروں کی زیادہ۔ اس معتبر ہوتے چہرے کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے۔احمد علی برقیؔ اعظمی کی غزلیہ شاعری کا نو ترقی پسند لہجہ مجھے متاثر کرتا ہے۔ایک ایسا لہجہ جو کائنات کی دھڑکنوں سے ملتا جُلتا لگے ہے مجھے۔زندگی کی سچائیاں اُن کے اشعار میں پگھلتی رہتی ہیں۔احمد علی برقی اعظمی نام ہے ایک ایسے شاعر کا جن کا بچپن ادب کے آنگن میں نکھرا، سنورا اور ایک سایہ دار شجر میں تبدیل ہو گیا۔ شجر بھی ایسا، جس کی مضبوط جڑیں دور تک پھیلی ہوئی ہیں۔’’دیمک ‘‘کچھ نہیں بگاڑ پاتے۔لفظ احمد علی برقیؔ اعظمی کی انگلیوں پر بیٹھے رہتے ہیں۔۔۔ انگلیاں جب مچلتی ہیں،حرکت میں آتی ہیں،لفظ لفظ تحریریں شاعری میں ڈھل جاتی ہیں۔

خورشید حیات

***

٭

نظموں اور غزلوں کی فیکٹری احمد علی برقیؔ اعظمی جس طرح سے جھرنوں سے پانی نکلتا ہے،رکتا نہیں،برقیؔ صاحب کے قلم سے اشعار کا سلسلہ تھمتا نہیں۔

سید فاضل حسین پرویز

ایڈیٹر ہفت روزہ ’’گواہ‘‘، حیدرآباد۔

***

٭

برقیؔ اعظمی صاحب اسم با مسمیٰ ہیں، عظیم ہیں،ایک باکمال شخصیت ہیں اور زبان و بیان پر اس قدر قدرت رکھتے ہیں کہ تاریخِ سخن میں شاید ہی کوئی ان کی گرد تک پہنچ سکا ہو، میں اپنے اس دعوے میں مبالغہ سے قطعی کام نہیں لے رہا ہوں، اُن کا ذہن ایک ایسی فعال مشین ہے کہ اِدھر آپ نے کسی کا ذکر کیا، یا انہوں نے کوئی مصرعہ سوچا، اور اُدھر مشین حرکت میں آ گئی اور اشعار ڈھلنے لگے اور کمال یہ ہے کہ اشعار فن کے تقاضوں پر نہ صرف پورے اُترتے ہیں بلکہ الفاظ کی درو بست، معنی آفرینی اور حسنِ بیان کے اعتبار سے ہر طرح اپنا جواب آپ ہوتے ہیں۔ایسے نابغۂ روزگار شخص کو تو سرکاری سطح پر یا ادب کے فروغ کی انجمنوں کو ان کی عظمت تسلیم کرتے ہوئے انعام دینا چاہیے۔

اویس جعفری امریکہ۔

٭٭٭

تشکر: مصنف جنہوں نے فائل فراہم کی

ان پیج سے تبدیلی، تدوین اور ای بک کی تشکیل: اعجاز عبید

Categories: شعری ادب, مجموعہ کلام

About Muslim Saleem

Muslim Saleem (born 1950) is a great Urdu poet, writer and journalist and creator of massive directories of Urdu poets and writers on different blogs. These directories include 1. Urdu poets and writers of India part-1 2. . Urdu poets and writers of India part-II 3. Urdu poets and writers of World part-I 4. Urdu poets and writers of World part-II, 5. Urdu poets and writers of Madhya Pradesh, 6. Urdu poets and writers of Allahabad, 7. Urdu poets and writers of Shajahanpur, 8. Urdu poets and writers of Jammu-Kashmir and Kashmiri Origin, 9. Urdu poets and writers of Hyderabad, 10. Urdu poets and writers of Augrangabad, 11. Urdu poets and writers of Maharashtra 12. Urdu poets and writers of Tamil Nadu, 13, Urdu poets and writers of Karnataka 14. Urdu poets and writers of Gujarat, 15. Urdu poets and writers of Uttar Pradesh, 16. Urdu poets and writers of Canada, 17. Urdu poets and writers of Burhanpur, 18. Urdu poets and writers of West Bengal 19. Female Urdu poets and writers, 20. Hindu Naatgo Shuara etc. These directories can be seen on :- 1. www.khojkhabarnews.com 2, www.muslimsaleem.wordpress.com 3. www.urdunewsblog.wordpress.com, 4. www.khojkhabarnews.wordpress.com. 5. www.poetswritersofurdu.blogspot.in 6 www.muslimsaleem.blogspot.in 7. www.saleemwahid.blogspot.in (Life) Muslim Saleem was born in 1950 at Shahabad, Hardoi, Uttar Pradesh in India, brought up in Aligarh, and educated at Aligarh Muslim University. He is the son of the well-known Urdu poet Saleem Wahid Saleem. He has lived in Bhopal, India since 1979. (Education): Muslim Saleem studied right from class 1 to BA honours in AMU schools and University. He completed his primary education from AMU Primary School, Qazi Para Aligarh (Now converted into a girls school of AMU). He passed high school exam from AMU City School, Aligarh and B.A. Hons (Political Science) from Aligarh Muslim University Aligarh. Later, Muslim Saleem did M.A. in Arabic from Allahabad University during his stay in Allahabad. (Career) Muslim Saleem began his career as a journalist in the Urdu-language newspaper Aftab-e-Jadeed, Bhopal. He is multilingual journalist having worked on top posts with Dainik Bhaskar (Hindi), Central Chronicle (English), National Mail (English), News Express (English) and most recently as the chief copy editor of the Hindustan Times in Bhopal. At present, Muslim Saleem is English news advisor to Directorate of Public Relations, Government of Madhya Pradesh. (as on December 1, 2012). (Works and awards) Muslim Saleem has been appointed as Patron of Indo-Kuwait Friendship Society. He is the author of Aamad Aamad, a compilation of his poetry published by Madhya Pradesh Urdu Academi. Several of his couplets are well known in the Urdu language. He won the Yaad-e-Basit Tarhi Mushaira, a poetry competition, in 1982. In 1971, Muslim Saleem was awarded by Ismat Chughtai for his Afsana “Nangi Sadak Par” at AMU Aligarh. His ghazals and short stories have been published in Urdu-language publications Shair, Ahang, Asri, Adab, Agai, Naya Daur, Sada-e-Urdu, Nadeem and other periodicals and magazines. His work in service of the Urdu language was recognized in a special 2011 edition of the periodical Abadi Kiran, devoted to his work. Evenings in his honour have been organised in a number of cities. Muslim Saleem is currently compiling a massive database of poets and writers of the Urdu language, both historic and currently active. (Translation of Muslim Saleem’s work in English): Great scholar Dr. Shehzad Rizvi based in Washington has translated Muslim Saleem’s ghazal in English even though they have never met. Dr. Rizvi saw Muslim Saleem’s ghazals on websites and was so moved that he decided to translate them. (Praise by poets and writers) Great poet and scholar of Urdu and Persian Dr. Ahmad Ali Barqi Azmi has also written a number of poetic tributes to Muslim Saleem. Dr. Azmi and Muslim Saleem are yet to meet face to face. Beside this, great short-story writer and critic Mehdi Jafar (Allahabad, Bashir Badr (Bhopal), Jafar Askari (Lucknow), Prof. Noorul Husnain (Aurangabad), Kazim Jaffrey (Lahore) and a host of others have written in-depth articles defining Muslim Saleem’s poetry. (Muslim Saleem on other websites) Muslim Saleem’s life and works have been mentioned on Wikipedia, www.urduadab4u.blogspot.in, www.urduyouthforum.org and several other website. In fact, www.urduyouthforum.org has given credit to Muslim Saleem for lifting a number of pictures and entries from Muslim Saleem’s websites and blogs. (Address): Muslim Saleem, 280 Khanugaon, VIP Road, Bhopal-462001 Mobiles: 0 9009217456 0 9893611323 Email: muslimsaleem@rediffmail.com saleemmuslim@yahoo.com Best couplets: Zindagi ki tarah bikhar jaayen…… kyun ham aise jiyen ki mar jaayen kar di meeras waarison ke sipurd…. zindagi kis ke naam mar jaayen rooh ke karb ka kuchh mudaawa no tha doctor neend ki goiyan likh gaya wo dekhne mein ab bhi tanawar darakht hai haalanke waqt khod chuka hai jaden tamam My Facebook url is http://en-gb.facebook.com/pages/Muslim-Saleem/176636315722664#!/pages/Muslim-Saleem/176636315722664?sk=info Other blogs http://urdupoetswriters.blogspot.com/ http://muslimspoetry.blogspot.com/ http://abdulahadfarhan.blogspot.com/ http://ataullahfaizan.blogspot.com/ http://hamaramp.blogspot.com/ http://madhyanews.blogspot.com/ http://cimirror.blogspot.com/
This entry was posted in Uncategorized. Bookmark the permalink.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s